استغفار

استغفار
05/04/2020 - 12:18

اللهم استغفرک لکل ذنب نسیته؛اے میرے معبود! مجھے ان سارے گناہوں
 کی خاطر معاف کردے جو میں بھول چکا ہوں۔

حضرت آدم اور حضرت حوّا (علیہما السلام) کی دعا
04/28/2020 - 20:06

خلاصہ: اس مضمون میں حضرت آدم اور حضرت حوّا (علیہما السلام) کی دعا بیان کرتے ہوئے اس سے حاصل ہونے والے درس آموز نکات کی وضاحت کی جارہی ہے۔

انسان کا نفس اپنے اعمال کے بدلے میں گروی
04/27/2020 - 10:33

خلاصہ: خطبہ شعبانیہ کی تشریح کرتے ہوئے چودہواں مضمون تحریر کیا جارہا ہے۔

استغفار کے ذریعے اپنے نفس کو رہائی دلانا
04/27/2020 - 08:29

خلاصہ: خطبہ شعبانیہ ماہ رمضان کے سلسلے میں ہے، اس خطبہ کے اس فقرے کی تشریح کی جارہی ہے جس میں استغفار کا حکم دیا گیا ہے۔

توبہ، فوری طور پر واجب
12/25/2019 - 21:55

خلاصہ: بعض واجبات کو فوراً بجالانا ہوتا ہے، ان میں سے ایک، توبہ ہے۔

مؤمن اور رات کا وقت
11/30/2019 - 13:31

خلاصہ: استغفار سے اللہ کی رحمت انسان کی طرف متوجہ ہوجاتی ہے اور وہ اللہ کی ناراضی سے بچ جاتا ہےاور استغفار کا سب سے بہترین وقت رات کا وقت ہے۔۔

استغفار، بخشش کا ذریعہ
06/27/2019 - 16:42

إِذٰا اسْتَغْفَرْتَ اللهَ، فَاللهُ یَغْفِرُ لَكَ؛”اگر تم خدا سے استغفار کروگے تو خداوندعالم بھی تم کو معاف کردےگا“۔[مدینة المعاجز، ج 8، ص 85۔]شیخ کلینی علیہ الرحمہ اس حدیث شریف کو امام زمانہ علیہ السلام کی احادیث کے ضمن میں بیان کرتے ہیں۔

استغفار سے غفلت مزید گناہوں کا سبب
04/23/2019 - 13:20

خلاصہ: استغفار کی اہمیت اس قدر زیادہ ہے کہ اگر گنہگار، استغفار نہ کرے تو اگلے گناہ کے گڑھے میں گرجائے گا، کیونکہ وہ اللہ تعالیٰ سے غافل ہے، اگر استغفار کرے تو وہ غفلت کی نیند سے جاگ گیا ہے اور گناہ سے پرہیز کرنے کی کوشش کررہا ہے، لیکن اگر استغفار نہ کیا تو وہ گناہ سے بچنے میں غفلت کررہا ہے۔

تین موقعوں پر ذکرِ خدا کی تین کنجیاں
08/14/2018 - 12:26

خلاصہ: ذکر صرف یہ نہیں کہ آدمی زبان سے کہے، بلکہ اس کا معتقد بھی ہونا چاہیے، انسان جس قدر اسلامی تعلیمات کو گہری نظر سے حاصل کرتا چلا جائے گا، دین کے بارے میں اس کی بصیرت بڑھتی چلی جائے گی، جب مشکلات سے سامنا کرے گا، تو ان تعلیمات کے مطابق عمل پیرا ہوگا، نہ کہ اس ذہنیت کے ساتھ جو عام طور پر لوگوں میں رائج ہے۔

استغفار
06/23/2018 - 13:24

وہي استغفار قابل ستائش ہے جو حقيقي اور دل کي گہرائيوں سے ہو زبان سے توبہ اور استغفار کرنے سے کچھ حاصل نہيں ہو سکتا استغفار کي شرط يہ ہے کہ انسان اپنے گناہ پر شرمندہ ہو اور آئندہ گناہ نہ کرنے کا قوي ارادہ رکھتا ہو،اگر ہم چاہتے ہيں کہ اس نعمت الہي يعني استغفار تک دسترسي حاصل کريں تو ضروري ہے کہ دو صفتوں کو خود سے دور کريں: پہلي غفلت و بے توجہي اور دوسري غرور و تکبر۔

صفحات

Subscribe to استغفار
www.welayatnet.com
Online: 25